Geo Headlines

via YouTube Cutter

 سپریم کورٹ نے ڈینیئل پرل قتل  کیس میں احمدعمر شیخ کو ڈیتھ سیل  سے فوری نکالنے کا حکم دے دیا 

2 روز عام بیرک میں رکھا جائے اس کے بعد سخت سکیورٹی میں سرکاری ریسٹ ہاؤس  میں منتکل کیا جائے

  جہاں اہلخانہ صبح 8 بجے سےشام 5 بجے تک ساتھ رہ سکیں  گے احمد عمر شیخ  کو موبائل فون اور انٹرنیٹ کی سہولت دستیاب نہیں ہوگی 

خاندان کو سرکاری خرچ پر رہائش اور ٹرانسپورٹ فراہم کرنے کا بھی حکم اٹارنی جنرل نے  عدالت کو بتایا کہ احمد عمر شیخ   کوئی عام  ملزم نہیں  بلکہ دہشت گردوں کا  ماسٹر مائنڈ ہے رہا کیا   تو غائب ہو جائے  گا

 جسٹس منیب اختر نے  کہا کہ افواج کی قربانیوں سے انکار نہیں لیکن ہم آئین  کے پابند ہیں

Post a Comment

0 Comments