یہ کون ٖٖٖچل بسا؟

یہ کون چل بسا؟

 

جب 1974میں بھارت نے ایٹم بم کا تجربہ کیا اور اس وقت کے پاکستانی وزیر اعظم ذوالفقار علی بھٹو نے ایٹم بم بنانے کا نعرہ ء بلند کیا تو پاکستان کو معاشی اور عالمی مسائل کا سامنا تھا بھاری فوجی اور اقتصادی پابندیوں میں جکڑے پاکستان کے لیے یہ ایک مشکل خواب تھا اور پاکستان کے لیے صرف ایک ہی راستہ بچا تھا اور وہ یہ کہ پاکستان سینٹری فیوجز اور یورینیم اور ڈیزائن کے لیے عالمی بلیک مارکیٹ تک رسائی حاصل کرے

یہ پاکستان کی خوش قسمتی تھی کہ اس وقت عالمی بلیک مارکیٹ پر ایک پاکستانی کا راج تھا اور وہ  قصور کے رہنے والا ایک پاکستانی شہری تھا

اس نے اپنے ملک کی خاطر ہر قسم کے ایٹمی مواد کو سمگل کرنے ذمہ داری رضاکارانہ سنبھال لی اور تمام مطلوبہ مواد پاکستان پہنچایا وہ شخصیت تھے قصور کے رہنے والے  شیخ عابد حسین  المعروف سیٹھ عابد آج سیٹھ عابد اس دنیاء فانی کو چھوڑ کر چلے گئے ہیں اللہ پاک ان کے درجات بلند فرمائے اور ان کو غریق رحمت کرے

اناللہ واناالیہ راجعون

saith abid ke death


Post a Comment

0 Comments