حکومت نے پٹرولیم مصنوعات کی نئی قیمتوں کا اعلان کیا

 

حکومت نے پٹرولیم مصنوعات کی نئی قیمتوں کا اعلان کیا
حکومت نے پٹرولیم مصنوعات کی نئی قیمتوں کا اعلان کیا


حکومت نے پٹرولیم مصنوعات کی نئی قیمتوں کا اعلان کیا

  • پٹرول ، مٹی کا تیل اور لائٹ اسپیڈ ڈیزل کی قیمتوں کو برقرار رکھنے کا فیصلہ ، ہائی اسپیڈ ڈیزل 4 روپے فی لیٹر تک بڑھ گیا
    حکومت نے پٹرولیم مصنوعات کی نئی قیمتوں کا اعلان کیا۔ تفصیلات کے مطابق وزارت خزانہ نے اوگرا کی جانب سے پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں اضافے کے بارے میں بھجوائی گئی سمری پر وزیر اعظم سے مشورہ کرنے کے بعد نئی قیمتوں کا اعلان کیا ہے۔ حکومت نے یکم دسمبر سے ہائی اسپیڈ ڈیزل کے علاوہ تمام پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں اضافہ نہ کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔
    حکومت نے پٹرول ، مٹی کے تیل اور لائٹ اسپیڈ ڈیزل کی قیمتوں کو برقرار رکھنے کا فیصلہ کیا ہے۔ ہائی اسپیڈ ڈیزل کی قیمت میں فی لیٹر 4 روپے اضافہ کیا گیا ہے۔ پٹرول کی قیمت 100.69 روپے فی لیٹر ، لائٹ ڈیزل 62.86 روپے فی لیٹر اور مٹی کے تیل کی قیمت 65.29 روپے فی لیٹر برقرار ہے۔

  • ہائی اسپیڈ ڈیزل کی نئی قیمت 105.43 روپے فی لیٹر طے کی گئی ہے۔
    نئی قیمتوں کا اطلاق آج رات 12 بجے سے ہوگا۔ دو روز قبل اوگرا نے پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں اضافے کی سمری تیار کی تھی۔ تیار کردہ سمری میں ، پیٹرول کی قیمت میں 2 روپے 50 پیسے فی لیٹر اور ڈیزل کی قیمت میں 3،50 روپے اضافے کی سفارش کی گئی تھی۔
  •  اوگرا نے وزارت خزانہ کو سمری ارسال کی تھی جس میں قیمتوں میں 15 دن کے اضافے کی سفارش کی گئی تھی۔ اس سے قبل حکومت نے پندرہ نومبر کو پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں کمی کا اعلان کیا تھا۔
    پٹرول کی قیمت میں 71 روپے فی لیٹر کمی کی گئی ہے۔ جس کے بعد پٹرول کی نئی قیمت 100 ڈالر 69 پیسے ہوگئی۔
  •  ہائی اسپیڈ ڈیزل کی قیمت میں 79 پیسے کمی کی گئی جس کے بعد تیز رفتار ڈیزل کی نئی قیمت 101 روپے 43 پیسے فی لیٹر طے کی گئی۔ لائٹ ڈیزل کی قیمت 62.86 روپے فی لیٹر برقرار رہی جبکہ مٹی کے تیل کی قیمت 65.29 روپے فی لیٹر برقرار رہی۔ وزارت پٹرولیم کو بھجوائی گئی سمری میں اوگرا نے پیٹرولیم مصنوعات کے ل 3 3 روپے فی لٹر سے زیادہ کی سفارش کی تھی ، لیکن حکومت نے اس قیمت میں صرف 79 روپے فی لیٹر کمی کردی۔

Post a Comment

0 Comments