ننکانہ صاحب: سخت حفاظتی اقدامات کے درمیان بابا گرو گرو نانک کی 551 ویں یوم پیدائش کی تقریبات ننکانہ صاحب میں شروع ہوگئی ہیں۔

 ننکانہ صاحب: سخت حفاظتی اقدامات کے درمیان بابا گرو گرو نانک کی 551 ویں یوم پیدائش کی تقریبات ننکانہ صاحب میں شروع ہوگئی ہیں۔

ننکانہ صاحب: سخت حفاظتی اقدامات کے درمیان بابا گرو گرو نانک کی 551 ویں یوم پیدائش کی تقریبات ننکانہ صاحب میں شروع ہوگئی ہیں۔
 ننکانہ صاحب: سخت حفاظتی اقدامات کے درمیان بابا گرو گرو نانک کی 551 ویں یوم پیدائش کی تقریبات ننکانہ صاحب میں شروع ہوگئی ہیں۔



ہندوستان سے 602 سکھ یاتریوں کا ایک گروپ یہاں گوردوارہ جنم استھن پہنچا ، ڈپٹی کمشنر راجہ منصور نے ان کا استقبال کیا۔

پاکستان میں اپنے پانچ روزہ یاتری میں سکھ یاتری ، ملک کے چھ گوردواروں میں مذہبی رسومات میں شرکت کریں گے۔

بابا گرو نانک کی یوم پیدائش کی تقریبات کی مرکزی تقریب 30 نومبر کو ننکانہ صاحب کے گوردوارہ جنم آستان میں ہوگی۔

ہندوستان سے آئے ہوئے ایک سکھ سیاح نے سکھوں کے لئے بہترین سفری سہولیات پر پاکستان حکومت کا شکریہ ادا کیا۔

یاتری یکم دسمبر کو واہگہ بارڈر کراسنگ کے راستے یاتری کے اختتام پر واپس ہندوستان واپس آئیں گے۔

محکمہ صحت صحت نے کورونا وائرس ٹیسٹ کے انتظامات کے ساتھ تھرمل گنوں سے آنے والے زائرین کا درجہ حرارت چیک کرنے کے لئے عملے کے ساتھ گوردوارہ جنم استھان کے دروازے پر ایک کاؤنٹر لگایا ہے۔


بابا گرونانک کئ برسی پر آئے سکھون کوکرونا وائرس کے معاملات میں اضافے سے بچانے کے لیے  ایس او پیز پر عمل کرنے کے لئے ہینڈ سینیٹائزر اور چہرے کے ماسک مہیا کیے جارہے ہیں


آنے والے بچوں کو پولیس اینٹی ویکسین پلانے کے لئے ایک کاؤنٹر بھی قائم کیا گیا ہے۔

یہاں یہ امر قابل ذکر ہے کہ پاکستان اور ہندوستان کے عہدیداروں نے گذشتہ سال 24 اکتوبر کو ایک تاریخی پروگرام میں کرتار پور راہداری کھولنے کے معاہدے پر دستخط کیے تھے۔


Post a Comment

0 Comments